یوکرین نے روس کو امن مذاکرات کی مشروط پیشکش کر دی

کیف: یوکرین نے روس کو آئندہ سال فروری کے مہینے میں امن مذاکرات کی مشروط پیشکش کی ہے۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورت کے مطابق یوکرین کے وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ امن مذاکرات کے لئے اقوام متحدہ میں سربراہی اجلاس بلایا جائے جبکہ سیکرٹری جنرل انتونیوگوتریس ثالث بن سکتے ہیں۔
یوکرین کی جانب سے امن مذاکرات کے لئے یہ مطالبہ بھی سامنے آیا ہے کہ مذاکراتی عمل سے قبل روس کو عالمی عدالت انصاف میں اپنے جنگی جرائم کا سامنا کرنا ہوگا۔
ادھر روسی وزیر خا رجہ کا کہنا ہے کہ یوکرین اور روس میں شامل 4 نئے علاقوں کو نازیوں سے پاک کیا جائے اور یہ علاقے غیر فوجی ہونے چاہئیں جبکہ ان تمام خطرات کو بھی ختم کیا جائے جو روس کی سلامتی کو لاحق ہیں۔
رپورٹس کے مطابق سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ نے روس یوکرین جنگ میں ثالث بننے پر آمادگی کا اظہار کیا ہے جبکہ روسی صدر بھی اپنے بیان میں کہہ چکے ہیں کہ یوکرین تنازع پر روس تمام فریقین سے بات چیت کے لیے تیار ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں