قوم پر اعتماد ہے، 2023ء میں پی ٹی آئی مضبوط حکومت بنائے گی، عمران خان

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سال 2022ء بیک وقت بہترین اور بدترین تھا، رب العزت پر ایمان اور اپنی قوم پر اعتماد ہے کہ تحریک انصاف 2023ء میں انتخاب کے ذریعے ایک مضبوط حکومت قائم کرے گی۔
سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ سال 2022ء بیک وقت بہترین اور بدترین تھا، ذاتی مفاد میں گُندھی ایک سازش کے ذریعے بہترین معاشی کارکردگی دکھانے والی حکومت کو ہٹایا گیا اور پاکستان کو مجرموں کے ایک گروہ کے حوالے کر دیا گیا، اس گروہ نے معیشت زمیں بوس کر دی، خود کو این آر او 2 دیا اور نیب قوانین میں ترامیم کے ذریعےتمام وائیٹ کالر کریمینلز کیلئے لوٹ مار کے دروازے کھول دیے۔
انہوں نے کہا کہ یہ سال بہترین یوں تھا کہ اسی دوران میں نے اہلِ پاکستان کو ایک قوم کے سانچے میں ڈھلتے دیکھا، الیکشن کمیشن اور مقتدرہ کی مکمل پشتیبانی سے ملک کی تمام سیاسی جماعتوں کے یکجا ہو کر تحریک انصاف کیخلاف صف آراء ہونے کے باوجود تحریک انصاف غیر معمولی عوامی تائید و حمایت سے 75 فیصد ضمنی انتخابات میں فتح یاب رہی اور اس نے خود کو صحیح معنوں میں ایک قومی جماعت کے طور پر منظم کیا۔
سابق وزیر اعظم نے کہا کہ آج کل قومی منظر نامے پر، خصوصاً دیوالیہ پن کے امکانات کے باعث چھائی مایوسی کے باوجود میرا رب العزت پر ایمان اور اپنی قوم پر اعتماد ہے کہ تحریک انصاف بلاشبہ 2023ء میں انتخاب کے ذریعے ایک مضبوط حکومت قائم کرے گی۔
عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی پاکستان کو ان بحرانوں سے نکالنے کیلئے ٹھوس ڈھانچہ جاتی اصلاحات متعارف کروائے گی جس میں امپورٹڈ سرکار اور اس کے سرپرستوں نے ملک کو دھکیلا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں