خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف کی جیل بھرو تحریک کامیاب نہ ہو سکی

مالاکنڈ، پشاور: خیبر پختونخوا میں پاکستان تحریک انصاف کی جیل بھرو تحریک کارکنوں کی عدم دلچسپی کے باعث ناکامی سے دو چار ہو گئی۔
ضلع مالاکنڈ میں کسی رہنما یا کارکن نے کوئی گرفتاری نہیں دی، سابق صوبائی وزیر شکیل خان، سابق ایم پی اے پیر مصور نے بھی گرفتاری نہیں دی، پی ٹی آئی ذرائع کے مطابق گرفتاری دینے کیلئے کل بٹ خیلہ میں کیمپ لگایا جائے گا۔
پی ٹی آئی پشاور ریجن کے صدر محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ پشاور میں تحریک انصاف جیل بھرو تحریک کو فی الحال موخر کر دیا گیا ہے، جیل بھرو تحریک میں پی ٹی آئی کا کوئی قائد، رہنما اور ورکر گرفتار نہیں ہو سکا۔
عاطف خان نے کہا کہ پی ٹی آئی کے کارکن اور قائدین گرفتاری پیش کرنے کے لیے موجود تھے مگر گرفتار نہیں کئے گئے۔
سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم یہاں موجود ہیں اور کہا بھی ہے کہ گرفتاری دینا چاہتے ہیں لیکن پولیس گرفتار نہیں کر رہی، ابھی عمران خان سے رابطہ کریں گے کہ آگے کیا کرنا ہے۔

اسد قیصر نے کہا کہ ہمارا مقصد دنیا کو بتانا ہے کہ پاکستان میں کوئی قانون نہیں، اس وقت عوام کو نکلنا ہو گا، ہمیں پاکستان کو قائد اعظم کا پاکستان بنانا ہو گا، ہمارے لوگ گاڑیوں میں بیٹھ گئے ہیں لیکن پولیس گرفتار نہیں کر رہی۔

سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا کہ قائدین اور کارکنان جیل کے باہر موجود ہیں، قیدیوں کی گاڑیوں میں جیل نہیں جائیں گے، جیل کا مین دروازہ کھولا جاءئے، جب تک عمران خان نہ کہے یہاں بیٹھے رہیں گے۔

جیل بھرو تحریک کے حوالے سے ایس پی عبدالسلام خالد نے کہا کہ پی ٹی آئی رہنما اور کارکن قیدیوں کی وین پر چڑھ کر فوٹو سیشن کر کے اتر گئے، جیل وین میں صرف پھولوں کے ہار ہی پڑے نظر آئے۔

انہوں نے بتایا کہ کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا، پی ٹی آئی کارکنان گرفتاری پیش کئے بغیر واپس چلے گئے، اگر کوئی رضاکارانہ گرفتاری دے گا تو گرفتار کر لیا جائے گا، دفعہ 144 اور روڈ بند کرنے پر ایف آئی آر درج ہوں گی۔

ایس پی سٹی عبدالسلام نے کہا کہ پی ٹی آئی کے کچھ رہنماؤں اور کارکنوں نے قیدیوں کی وین کے ٹائر بھی پنچر کئے ہیں۔

باجوڑ میں پولیس وین پر گرفتاری پیش کرنے کے لئے اعلانات کیے گئے کہ جو کوئی بھی رضاکارانہ گرفتاری پیش کرنا چاہے تو وہ جیل وین میں آ جائے، جیل وین باجوڑ خالی گشت کرتی رہی مگر کوئی نہیں آیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں